آخر ہر 4 سال بعد فروری کا مہینہ 29 دن کا کیوں ہوتا ہے؟

آخر ہر 4 سال بعد فروری کا مہینہ 29 دن کا کیوں ہوتا ہے؟

ویب ڈیسک 23 فروری ، 2024

2024 کوئی عام سال نہیں بلکہ یہ ایک لیپ ایئر ہے۔ مگر لیپ ایئر کیا ہوتا ہے؟ ہمیں اس کی ضرورت کیوں ہوتی ہے اور یہ کس طرح ہماری زندگی کا حصہ بنا؟
لیپ ایئر ایسے سال کو کہا جاتا ہے جو 365 کی بجائے 366 دنوں پر مشتمل ہوتا ہے۔

گریگورین کیلنڈر میں ہر 4 سال بعد لیپ ایئر آتا ہے اور اس کیلنڈر کو دنیا کے زیادہ تر حصوں میں استعمال کیا جاتا ہے۔

اس سال کا اضافی دن یا لیپ ڈے 29 فروری ہوتا ہے اور یہ تاریخ دیگر برسوں میں نہیں ہوتی۔

اس سال کو لیپ کہنے کی وجہ کافی دلچسپ ہے۔

ہوسکتا ہے کہ آپ نے کبھی غور نہ کیا ہو مگر مارچ کے بعد لیپ ایئر کی ہر تاریخ گزشتہ سال کے مقابلے میں ایک دن آگے چلی جاتی ہے۔

مثال کے طور پر یکم مارچ 2023 کو بدھ کا دن تھا مگر 2024 میں یکم مارچ کو جمعہ ہوگا، جبکہ لیپ ایئر نہ ہونے پر یہ جمعرات کا دن ہوتا۔

گریگورین کیلنڈر میں لیپ ایئر ، لیپ ڈے کے علاوہ لیپ سیکنڈ کا بھی اضافہ ہوتا ہے اور آخری بار ایسا 2016 میں ہوا تھا۔

مگر 2035 سے لیپ سیکنڈر کا استعمال ختم کیا جا رہا ہے۔

تو ہمیں لیپ ایئر کی ضرورت کیوں ہوتی ہے؟
بظاہر تو ایک

Read Previous

لاہور: پاکستان مسلم لیگ ن نے خواتین کو بااختیار بنانے کے لیے پُرعزم، 9 نکاتی منشور تیار کر لیا۔

Read Next

ملاکنڈ : درگئی حجاب کلے جوڑ جاخو میں تیز رفتار موٹر سائیکل کی راہگیر کو ٹکر

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *