عورتوں سے متعلق حضور صلی اللہ علیہ وسلم کے ارشادات

۱) رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم نے فرمایا:عورت پانچ وقت کی نماز پڑھتی رہے، وہ رمضان کے روزے رکھ لیا کرے اور اپنی آبرو کی حفاظت رکھے اور اپنے خاوند کی تابعداری کرے تو ایسی عورت جنت میں جس دروازے سے چاہے داخل ہوجائے۔

۲) رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم سے ایک شخص نے عرض کیا:یارسول اللہ!فلانی عورت کثرت سے نفل نمازیں اور روزے اور خیر خیرات کرتی ہے لیکن زبان سے پڑوسیوں کو تکالیف بھی پہنچاتی ہے۔ آپ  صلی اللہ علیہ وسلم  نے فرمایا: وہ دوزخ میں جائے گی۔ پھر اس شخص نے عرض کیا کہ فلانی عورت نفل نمازیں اور روزے اور خیرات کچھ زیادہ نہیں کرتی،یوں ہی کچھ پنیر کے ٹکڑے دے دلادیتی ہے لیکن زبان سے پڑوسیوں کو تکلیف نہیں دیتی۔ آپ  صلی اللہ علیہ وسلم  نے فرمایا: وہ جنت میں جائے گی۔

۳) رسول اللہ  صلی اللہ علیہ وسلم  نے فرمایا :کسی عورت کا اپنے گھر میں گھر گرہستی کرنا جہاد کے رتبہ کو پہنچنا ہے۔

۴) رسول اللہ  صلی اللہ علیہ وسلم  نے فرمایا:اے عورتو! میں نے تم کو دوزخ میں بہت دیکھا ہے۔ عورتوں نے پوچھا:اس کی کیا وجہ ہے؟ فرمایا:تم پھٹکار سب چیزوں پر بہت ڈالا کرتی ہو (یعنی لعن طعن کرتی ہو، کوستی ہو) اور شوہر کی ناشکری بہت کرتی ہو۔ اور اس کی دی ہوئی چیزوں کی بہت ناقدری کرتی ہو۔

۵) اسماء بنت یزید انصاریہ سے روایت ہے کہ انہوں نے عرض کیا:یارسول اللہ! میں عورتوں کی فرستادہ آپ کے پاس آئی ہوں۔ (یعنی عورتوں نے مجھے یہ کہہ کر بھیجا ہے کہ) مرد جمعہ اور جماعت اور عیادت مریض اور حضورِ جنازہ اور حج و عمرہ اور اسلامی سرحد کی حفاظت کی بدولت ہم پر فوقیت لے گئے۔ آپ  صلی اللہ علیہ وسلم  نے فرمایا:تو واپس جا اور عورتوں کو خبر کر دے کہ تمہارا اپنے شوہر کے لیے بناؤ سنگھار کرنا یا حقِ شوہری ادا کرنا اور شوہر کی رضا مندی کا لحاظ رکھنا اور شوہر کے موافق مرضی کا اتباع کرنا یہ سب ان اعمال کے برابر ہے۔

۶) رسول اللہ  صلی اللہ علیہ وسلم  نے فرمایا: ایسی عورت پر اللہ کی رحمت نازل ہو جو رات کو اٹھ کر تہجد پڑھے اور اپنے شوہر کو بھی جگائے کہ وہ بھی نماز پڑھے۔

۷) رسول اللہ  صلی اللہ علیہ وسلم  نے فرمایا: سب عورتوں سے اچھی وہ عورت ہے کہ جب شوہر اس کی طرف نظر کرے تو وہ اس کو خوش کردے اور جب وہ اس کو کوئی حکم دے، تو وہ اس کی اطاعت کرے ۔ اور اپنی جان اور مال میں اس کو ناخوش کرکے اس کی مخالفت نہ کرے۔

۸) رسول اللہ  صلی اللہ علیہ وسلم  نے فرمایا: جب کوئی عورت اپنے شوہر کو دنیا میں کچھ تکلیف دیتی ہے تو جنت میں جو حور اس شوہر کو ملے گی وہ کہتی ہے کہ خدا تجھے غارت کرے، وہ تیرے پاس مہمان ہے جلدہی تیرے پاس سے ہمارے پاس چلا آئے گا۔

۹) رسول اللہ  صلی اللہ علیہ وسلم  نے فرمایا: سب سے اچھی وہ عورت ہے جو اپنی عزت و آبرو کے بارے میں پارسا ہو اور اپنے خاوند پر عاشق ہو۔

۱۰) رسول اللہ  صلی اللہ علیہ وسلم  نے فرمایا:ا للہ تعالیٰ اس عورت کو پسند کرتا ہے جو اپنے شوہر کے ساتھ تو محبت اور لاگ کرے اور غیر مرد سے اپنی حفاظت کرے۔

Read Previous

وضو سے حفظانِ صحت

Read Next

بحری جنگ کی پہلی شہید خاتون

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *